اسٹیبلشمنٹ سے کوئی تعلق اور رابطہ نہیں، شیخ رشید

اسلام آباد (کنٹری نیوز)سابق وفاقی وزیر شیخ رشید نے کہا ہے کہ عدم اعتماد سے ایک ماہ پہلے سے میرا اسٹیبلشمنٹ سے کوئی رابطہ نہیں ہے۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیر داخلہ شیخ رشید نے لال حویلی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہماری حکومت کے خلاف سازش لندن سے ہوئی لیکن عدم اعتماد سےعمران خان کو ختم کرنے کا سوچنے والے اب ناکام ہوگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں اس بات کا حامی ہوں کہ الیکشن کی تاریخ دیں تو ہم بیٹھنے کے لئے تیار ہیں لیکن الیکشن میں تاخیرسے فائدہ ہونے کاسوچنے والے بےوقوف ہیں کیونکہ جتنا الیکشن تاخیر سے ہوگا عمران اتنا مقبول ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ میری دعا ہے ہم الیکشن کی طرف جائیں اور میں آج بھی اکتوبر، نومبرمیں الیکشن کی تاریخ پرقائم ہوں۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ چوروں اورڈاکوؤں پر کسی ملک کو اعتبار نہیں ہے، کوئی ان کو سیلوٹ کرنا نہیں چاہتا ہے جس کی وجہ سے حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ کسی ملک نے ان کی جھولی میں خیرات نہیں ڈالی جس کی وجہ سے آرمی چیف نے معیشت کو تباہی سے بچانے کیلئے کالز کیں، انہوں نے دیگر ممالک سے کہا کہ معیشت تباہی سے بچانے کیلئے مدد کی جائے۔انہوں نے بتایا کہ ڈالر کم ہوگیا ہے لیکن غریب مر چکا ہے، ملک کے 62٪ لوگ غربت کی لپیٹ میں آچکے ہیں جس کی وجہ سے نوجوان کی جیب میں موبائل کلاشنکوف کی صورت جیب میں موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ 75 یوم آزادی کے موقع پر ملک کے حالات مزید خراب ہورہے ہیں اس لئے تمام طاقتوں سے کہناچاہتا ہوں ملک کو تباہی سے بچائیں۔سابق وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ سیاستدانوں کوجواب دینےمیں احتیاط کرنی چاہیے، عدلیہ اوراداروں کے خلاف بیانات نہیں دینے چاہئے۔ان کا کہنا تھا کہ میں کبھی نہیں چاہتا کہ ادارے متنازعہ بنیں، چیف آف آرمی سٹاف لندن میں ہیں تو ہماری عزت ہے۔