امریکہ ملک میں غربت سے جڑے مسائل کو حل کرنے پر توجہ مرکوز کرے ،چین

اقوام. متحدہ (کنٹری نیوز)چینی مندوب نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 50 ویں اجلاس میں انتہائی غربت کے بارے میں خصوصی نمائندے کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے سماجی تحفظ کے مسائل پر اپنے موقف کی وضاحت کی۔ انہوں نے کہا کہ نوول کورونا وائرس کی وبا سے امریکہ میں دیرینہ غربت کا مسئلہ اجاگر ہوا ہے۔ انہوں نے امریکہ پر زور دیا کہ وہ اس مسلے کے حل پر توجہ دے۔ منگل کے روز چینی میڈ یا کے مطا بق
چینی مندوب نے کہا کہ چین نےایک معتدل خوشحال معاشرہ قائم کیا ہے ،مطلق غربت کے مسئلے کو تاریخی طور پر حل کیا ہے اور غربت سے نجات پانے والے لوگوں کے معیار زندگی میں نمایاں بہتری لائی ہے۔ چین نے دنیا کا سب سے بڑا سماجی تحفظ کا نظام تشکیل دیا ہے، جس میں پنشن، طبی تحفظ، اور سماجی امداد شامل ہے اور شہری اور دیہی باشندوں دونوں کا احاطہ کیا گیا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ وبا نے امریکہ اور دیگر مغربی ممالک میں غربت اور عدم مساوات کے دیرینہ مسائل کو اجاگر کیا ہے۔امریکی سماجی تحفظ کے نظام میں منظم عدم مساوات موجود ہے، تقریباً 30 ملین لوگوں کے پاس کسی قسم کی طبی انشورنس نہیں ہے، اور 40 ملین سے زیادہ غریب لوگ ہیں،اس کے باوجود امریکی حکومت کے پاس غربت کے مسئلے کو حل کرنے کے لیے کوئی سیاسی عزم نہیں ہے۔چینی مندوب نے امریکہ پر زور دیا کہ وہ غربت کے مسائل کو حل کرنے کو اہمیت دے اور غریب عوام کی بقا ، ترقی اور سماجی تحفظ تک مساوی رسائی کے حقوق کا ٹھوس تحفظ کرے ۔