مجھے کسی نے اغوا نہیں کیا’اپنی مرضی سے آئی ہوں دعا زہرا کا ویڈیو بیان منظر عام پر آ گیا

کراچی/ لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)کراچی کے علاقے گولڈن ٹاؤن سے لاپتہ ہونے والی 14 سالہ لڑکی دعا زہرا کی جانب سے حیرت انگیز انکشافات منظر عام پر آئے ہیں۔لاہور سے بازیاب کرائی جانے والی دعا زہرا کا ویڈیو بیان منظر عام پر آگیا ہے جس میں لڑکی نے اپنی پسند سے شادی کرنے اور والدین کے تشدد کے متعلق بتایا ہے۔ دعا زہرا کے ویڈیو بیان کے مطابق اس کے گھر والے لڑکی کو پر تشدد کرتے تھے اور زبردستی اس کی شادی کسی سے کروانا چاہتے تھے۔دعا زہرا نے اپنے ویڈیو بیان میں قبول کیا ہے کہ اسے کسی نے بھی اغوا نہیں کیا ہے بلکہ وہ اپنی مرضی سے ا?ئیں ہیں جبکہ ساتھ کوئی قیمتی سامان نہیں لائی۔ویڈیو بیان کے مطابق دعا زہرا کی اصل عمر 18 سال ہے جبکہ اس کے گھر والوں نے اس حوالے سے غلط بیان دیا ہے۔دعا نے اپنے ویڈیو بیان میں واضح کیا ہے کہ انہوں نے نے مرضی سے شادی کی ہے اور اب وہ اپنے خ?وند کے ساتھ بہت خوش ہیں۔