نان فائلرز کیلئے گاڑیوں کی رجسٹریشن ٹیکس میں 100 فیصد اضافہ

اسلام آباد(کنٹری نیوز)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے نان فائلر پر گاڑیوں کی رجسٹریشن کا ٹیکس 100 فیصد بڑھانے کی تجویز منظور کرلی۔تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس چیئرمین سلیم مانڈوی والا کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ جس میں سینیٹرز سعدیہ عباسی، محمد طلحہ محمود، ذیشان خانزادہ، انوار الحق کاکڑ کے علاوہ چیئرمین ایف بی آر، ممبر پالیسی ایف بی آر اور دیگر حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں چیئرمین کمیٹی نے ایف بی آر حکام کو ہدایت کی کہ جو بھی قانون سازی ہو اسے بل کی شکل میں لایا جائے اور آرڈیننس کے ذریعے قانون سازی نہ کی جائے۔اجلاس میں قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے ایف بی آر میں گوشوارے جمع نہ کرانے والوں کے لیے (نان فائلرز) کے لیے گاڑیوں کی رجسٹریشن کا ٹیکس 100 فی صد بڑھانے کی تجویز منظور کرلی۔اجلاس میں ایف بی آر حکام نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستانیوں کو دبئی لندن یا نیویارک کی ڈکلیئرڈ پراپرٹی کی قیمت پر ایک فیصد کیپٹل ویلیو ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔ ایف بی آر حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ پائلٹ کیلئے فلائنگ الاؤنس کو بھی اس کی تنخواہ میں شامل کیا گیا ہے، پہلے فلائنگ الاؤنس پر 7.5 فیصد ٹیکس تھا، فلائنگ الاؤنس پر ٹیکس لگانا درست نہیں، تنخواہ پر ٹیکس لیا جارہا ہے تاہم قائمہ کمیٹی خزانہ نے فلائنگ الاؤنس تنخواہ میں ضم کرکے ٹیکس لگانے کی مخالفت کی۔ایف بی آر حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ ریٹائرڈ اور حاضر سروس آرمی ملازمین کیلئے پراپرٹی پرکیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے اور حکومتی ملازمین کیلئے بھی پراپرٹی پرکیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے جس پر سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ نے ایف بی آرکی تجویز منظور کرلی ہے۔ایف بی آر حکام کے مطابق سپریم کورٹ ڈیم فنڈ کو ٹیکس چھوٹ دی گئی ہے، انکم ٹیکس چھوٹ نجی رفاعی اداروں کو بھی حاصل ہے ، یہ ٹیکس چھوٹ پہلے سے ہے اس میں کچھ بیرونی ادارے بھی ہیں جب کہ کچھ رفاعی ادارے اپنی پراپرٹیز کرائے پر دے کر انکم حاصل کرتے ہیں۔سینیٹر سعدیہ عباسی نے سپریم کورٹ ڈیم فنڈ پر اعتراض اٹھایا اور کہا کہ پانی کے ذخائر بڑھانے کا کام حکومت کا ہے، سپریم کورٹ کو یہ اختیار ہرگز نہیں کہ اس پر کام کرے، قانون کے مطابق یہ پیسہ حکومتی خزانے میں آنا چاہیے۔بعد ازاں چیئرمین کمیٹی سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ بجٹ کا عمل ختم ہو جائے تو اس پر دوبارہ بات کریں گے۔اجلاس میں چیئرمین ایف بی آر عاصم احمد نے بریفنگ دیتے ہوئے مزید کہا کہ گاڑیوں پر نان فائلر کے لیے ٹیکس کو 100 فیصد بڑھا دیا گیا ہے جس پر قائمہ کمیٹی کے چیئرمین نے کہا کہ چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس نہ لگایا جائے، چاہے وہ فائلر ہے یا نان فائلر۔