پاکستانی عوام سیلاب پر قابو پانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔چینی وزارت خارجہ

بیجنگ (کنٹری نیوز)وزارت خارجہ کے ترجمان چاؤ لی جیان نے پاکستان میں سیلاب کی آفت کے بارے میں کہا کہ چین اور پاکستان، چار موسموں کے تزویراتی تعاون پر مبنی شراکت دار، سچے دوست اور اچھے بھائی ہیں جو ایک دوسرے کے غم میں برابر کے شریک ہیں ۔پیر کے روز چینی میڈ یا کے مطا بق پاکستان میں سیلاب کی تباہی کے آغاز پر ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ ای نے فوری طور پر پاکستان کے وزیر خارجہ بلاول بھٹو سے ہمدردی کا اظہار کیا۔ 4,000 خیمے، 50,000 کمبل، 50,000 ترپالیں اور دیگر ذخائر جو چین نے پاکستان کو فراہم کیے ہیں، انہیں آفات سے نجات کے فرنٹ لائن میں ڈال دیا گیا ہے۔ تباہی کی مزید پیشرفت کے پیش نظر اور پاکستان کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے، چین نے انسانی امداد کی ایک نئی کھیپ بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں 25,000 خیمے اور دیگر فوری ضرورت کا سامان شامل ہے۔ چین کی ریڈ کراس سوسائٹی، پاکستان ریڈ کریسنٹ سوسائٹی کو 300,000 امریکی ڈالر کی ہنگامی نقد امداد بھی فراہم کرے گی۔ آل پاکستان چائنیز انٹرپرائز ایسوسی ایشن نے وزیراعظم پاکستان فلڈ ریلیف فنڈ میں 15 ملین روپے کا عطیہ دیا۔
ترجمان نے کہا کہ قدرتی آفات بے رحم ہوتی ہیں تاہم لوگوں کے جذبات ہوتے ہیں۔ ہم یہ نہیں بھولیں گے کہ 2008 میں چین کے وین چھوان کے زلزلے کے بعد پاکستانی بھائیوں نے فوری طور پر مدد کا ہاتھ بڑھایا اور تمام خیموں کو نکال کر چین میں آفت زدہ علاقوں میں بھیج دیا جس نے چینی عوام کو بہت متاثر کیا۔ اس سیلاب کی صورت میں ہم بھی برادر پاکستانی عوام کے ساتھ کھڑے ہیں۔ اگلے مرحلے میں چین پاکستان کے ساتھ آفات کی روک تھام اور تخفیف اور عالمی موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کے شعبوں میں تعاون کو مزید مضبوط کرے گا، تاکہ پاکستان کو سیلاب سے لڑنے اور آفات کے بعد کی تعمیر نو میں مزید مدد فراہم کی جا سکے۔ پاکستان میں چینی سفارتخانہ اور چین میں پاکستانی سفارت خانہ فنڈز جمع کرنے کے لیے متعلقہ اداروں اور زندگی کے تمام شعبوں سے رابطہ کر رہے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ پاکستانی عوام جلد از جلد سیلاب پر قابو پانے اور اپنے گھروں کو دوبارہ تعمیر کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔